سوشل میڈیا پر تحریک انصاف اور عمران خان کے شانہ بشانہ چلنے والے ٹائیگرز کی موجیں ۔۔۔ وزیراعظم پاکستان نے بڑا حکم جاری کر دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) حکمران جماعت سے تعلق رکھنے والے سوشل میڈیا ورکرز کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کر کے ان سے استفادہ کیا جائے گا، وزیراعظم ان ورکرز کی خدمات کے اعتراف کے لئے ایک تقریب بھی منعقد کریں گے جس میں انہیں حکومت اور پارٹی کی طرف سے گائیڈ لائن دی جائے گی،

حکومت روایتی پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے متوازی سوشل میڈیا اوریوٹیوب چینلز کی سرپرستی کے لئے میکنزم تیار کر رہی ہے ،سوشل میڈیا ورکرز اور یوٹیوب چینلز کے مالکان کو حکومت کی طرف سے مالی امداد کی تجویز بھی زیر غور ہے ،ذرائع کے مطابق یوٹیوب چینلز کے لئے قواعد و ضوابط بھی تیار کئے جائیں گے اور ضابطہ اخلاق بنایا جائے گا جس کی پابندی ضروری ہو گی، اس کے لئے وزیراعظم نے شہباز گل، اظہرمشوانی، ڈاکٹر ارسلان خالد کو ذمہ داری سونپی ہے ،وزیراعظم نے پارٹی کے سینئر رہنماؤں اور عہدیداروں سے مشاورت شروع کر دی اور تنظیمی عہدیداروں کو ہدایت کی کہ وہ بالخصوص 2018،2013 کے انتخابات کے لئے سوشل میڈیا پر مہم چلانے والے ورکرز کا ڈیٹا اکٹھا کریں ، ان کی حوصلہ افزائی کے لئے اقدامات کئے جائیں ۔یاد رہے کہ سوشل میڈیا پر گند پھیلانے والے ہو جائیں خبردار! سائبر کرائمز ایکٹ میں تبدیلی کی لئے کمیٹی قائم کر دی گئی۔تفصیل کے مطابق سوشل میڈیا پر نازیبا پیغامات، تصاویر اور ویڈیوز روکنے کے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے حکومت نے آپریشن کلین اپ شروع کرنے کے لیے تیاری کر لی ہے اور سائبر کرائم ایکٹ قوانین بدلنے کے لیے کمیٹی بنا دی ہے۔ایف آئی اے کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ہیڈ کوارٹرز احسان صدیق کمیٹی کو کا چیئرمین مقرر کر دیا گیا ہے۔ کمیٹی کے باقی ممبران میں اے ڈی جی بشارت اور ڈائریکٹر سائبر کرائم وقار احمد چوہان بھی شامل ہیں۔ان کے علاوہ ڈائریکٹر لا طارق محمود اور ڈپٹی ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ سجاد علی خان کو بھی اس کمیٹی میں شامل کیا گیا ہے۔کمیٹی واٹس اپ، فیس بک، ٹویٹر اور انسٹاگرام سمیت 6 سوشل سائٹس کے عدم تعاون پر سفارشات پیش کرے گی۔ کمیٹی اپنی سفارشات وزارت داخلہ اور وزارت قانون کو بھجوائے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *